متحدہ عرب امارات، بحرین اور قطر کے حکمران کو تلور کے شکار کی اجازت:

0
397

09 November 2021

پاکستان میں رواں مہینے متحدہ عرب امارات، بحرین اور قطر کے حکمران اور ان کے وزرا، فوجی سربراہان اور شاہی خاندان کے ارکان تلور کا شکار کر رہے ہیں جس کے لیے پاکستان کی وزرات خارجہ نے پنجاب، سندھ اور بلوچستان کے اضلاع میں ان مہمانوں کے شکار کے خصوصی اجازت نامے جاری کیے ہیں۔

پاکستان کی وزرات خارجہ کی جانب سے بنائے گئے ضابطہ اخلاق کے مطابق تلور کا شکار صرف بازوں کی مدد سے کیا جائیگا اور اس میں بندوق، جال وغیرہ کا استعمال نہیں ہوگا۔

شکار کی اجازت یکم نومبر سے لیکر 31 جنوری تک ہوگی اس کے بعد 10 روز سے زیادہ قیام پر ایک لاکھ امریکی ڈالر جرمانہ عائد ہوگا۔

صوبائی محکمہ جنگلی حیات کا سٹاف ساتھ میں تعینات ہوگا جو ہر شکار کی گنتی کرے گا، ہر پرمٹ پر 100 تلور کے شکار کی اجازت ہوگی اس سے زیادہ شکار پر فی پرندہ دس ہزار امریکی ڈالر ادا کرنے ہوں گے تلور کے علاوہ کوئی اور شکار نہیں کیا جائیگا۔

شکار کے پرمٹ جن کے نام جاری کیے گئے ہیں صرف وہ شکار کرنے کے اہل ہوں گے،

Webdesk

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here